Calorie Calculator & Tracker

سونونگم کا اذان کیخلاف متنازعہ بیان ، بھارتی عدالت نے فیصلہ سنا دیا

ممبئی (مانیٹرنگ ڈیسک )حال ہی میں مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر اذان سے متعلق متنازعہ بیان دینے کے بعد کافی عرصہ تک سونو نگھم تنقید کی زد میں رہے جس کے بعد ان کے خلاف عدالت سے بھی رجوع کیا گیا۔ تاہم آج بھارتی ہائیکورٹ نے سونو نگھم کے خلاف کیس کا فیصلہ سنا دیا ہے۔ عدالت نے سونو نگھم پر عائد تمام الزامات سے انہیں بری الذمہ قرار دے دیا۔عدالت نے بیان دیا کہ سونونگھم کا بیان اذان کے خلاف نہیں بلکہ لاڈ اسپیکر کے خلاف تھا۔

پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹس نے اپنے بیانات میں کہا کہ بلاشبہ اذان مذہب اسلام کا ایک اہم اور لازمی جزو ہے، لیکن ہر جگہ لاڈ اسپیکرز پر اذان دینا ضروری نہیں ہے۔ یاد رہے کہ سونو نگھم کے اذان سے متعلق بیانات پر ہریانہ کے علاقہ سونی پت کے رہائشی آس محمد نے بھارتی گلوکار کے خلاف پٹیشن دائر کی تھی۔ پٹیشن میں سونو نگھم کے خلاف قانونی چارہ جوئی کا مطالبہ کیا گیا تھا۔ پٹیشن میں کہا گیا کہ سونونگھم کے بیانات نے مسلمانوں کے بنیادی مذہبی حق ، جس کا ذکر آئین میں بھی کیا گیا ہے، کی خلاف ورزی کی ہے۔ اور مسلمانوں کے جذبات کو بھی مجروح کیا ہے۔

Comments

comments